Connect with:

"خبر کی دوڑ میں سب سے آگے"

Translate:
Sunday / July 23, 2017 3:41 PM
HomeBlogsکیا آپ جانتے ہیں کہ پھلوں کی خریداری نہ کر کے کس طرح اس کی قیمت کم کی جا سکتی ہے ؟

کیا آپ جانتے ہیں کہ پھلوں کی خریداری نہ کر کے کس طرح اس کی قیمت کم کی جا سکتی ہے ؟

ماہ رمضان کے مقدس مہینے کی آمد کے ساتھ ہی جہاں اشیاۓ ضرورت کی تمام اشیا کی قیمتوں کو پر لگ جاتے ہیں ان ہی میں سے ایک پھل بھی ہوتے ہیں ۔جو کہ گرمی کے روزوں کی افطاری کا اہم جز سمجھے جاتے ہیں ۔
لوگ فروٹ چاٹ ، ملک شیک کے ساتھ ساتھ افطار کے وقت پیاس کے خاتمے کے لۓ خربوزہ ۔تربوز اور گرمے کا استعمال بھی کرتے ہیں ۔ اس وقت ان پھلوں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں ۔اور غریبوں کے لۓ تو پھلوں کی قیمت پوچھنا بھی ممکن نہیں مگر اس کے ساتھ ساتھ سفید پوش طبقہ بھی پھل خریدنے کی استطاعت کھو بیٹھا ہے ۔
سوشل میڈیا کو ہتھیار بنا تے ہوۓ کراچی میں ایک تحریک کا آغاز کیا گیا ہے کہ جون کی 4،3،2 تاریخ او صارفین پھلوں کی خریداری کا بائیکاٹ کریں ۔تاکہ پھلوں کی قیمتیں کم کروائی جا سکیں ۔اس بائیکاٹ کے حوالے سے بہت سے صارفین کے ذہنوں میں یہ سوال پیدا ہوا کہ ہمارے پھل نہ خریدنے سے پھل سستا کیسے ہو گا؟
اس وقت مارکیٹ میں تربوز ۔خربوزہ ، گرما، کیلا ،آم ،چیکو ،آڑواور فالسے وہ قابل ذکر پھل ہیں جو مارکیٹ میں موجود ہیں ۔اور یہ تمام پھل ایک دو دن تک استعمال نہ ہونے کے سبب گلنا سڑنا شروع ہو جاتے ہیں ۔
اگر ہم اپنے علاقے کے ٹھیلے والے سے ان پھلوں کو خریدنے سے انکار کریں گے تو اس کے نتیجے میں اس کا پھل نہیں بکے گا ۔اور وہ مزید پھلوں کی خریداری کے لۓ آڑھتی کے پاس نہیں جاۓ گا ۔
اس طرح جب آڑھتی کا پھل نہیں بکے گا تو وہ خراب ہونا شروع ہوجاۓ گا ۔اس نقصان سے بچنے کے لۓ وہ پھل کم قیمت پر بھی بیچنے پر آمادہ ہو جاۓ گا ۔اور ا س طرح صارفین کو سستے پھل مل سکیں گے ۔
لہزا اس بائیکاٹ کا حصہ بنیں

Share

No comments

Sorry, the comment form is closed at this time.