Home / news / پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس: صدر ممنون کے خطاب کے دوران اپوزیشن کا شور شرابہ

پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس: صدر ممنون کے خطاب کے دوران اپوزیشن کا شور شرابہ

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں صدر مملکت ممنون حسین کے خطاب کے دوران اپوزیشن نے شور شرابہ کیا اور ’گو نواز گو‘ کے نعرے لگائے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق کی صدارت میں منعقد ہوا۔

مشترکہ اجلاس میں مسلح افواج کے سربراہان، وزرائے اعلیٰ، گورنرز اور سفارت کار شریک ہوئے۔

اجلاس کے موقع پر غیر ملکی سفیروں اور مسلح افواج کے سربراہان کی شرکت کے باعث پارلیمنٹ ہاؤس کی سیکیورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے۔

مشترکہ اجلاس سے صدر مملکت ممنون حسین نے بھی خطاب کیا۔ یہ ان کا موجودہ پارلیمنٹ سے چوتھا خطاب ہے۔

صدر ممنون حسین کے خطاب کے دوران اپوزیشن نے طے شدہ حکمت عملی کے تحت شور شرابہ کیا۔ اس دوران ایوان میں ’گو نواز گو‘ کے نعرے بھی لگائے گئے۔

صدر مملکت کا خطاب

اپنے خطاب میں صدر مملکت ممنون حسین کا کہنا تھا کہ ملک میں جمہوریت نے کئی نشیب و فراز دیکھے ہیں۔ بعض عناصر کی وجہ سے فرد اور ریاست کے درمیان رشتہ کمزور ہوا۔ بلوچستان اور فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کے اقدامات ترقیاتی عمل کا حصہ ہے۔

صدر ممنون حسین کا کہنا تھا کہ دوسروں پر ذمہ داری ڈالنا قوموں کو آگے بڑھنے سے روکتا ہے۔ ترقیاتی عمل پر مختلف طبقات کا اختلاف ہونا غیر فطری نہیں لیکن اختلاف رائے کو انتشار میں بدلنے کا راستہ حکمت سے بند کیا جائے۔

اپنے خطاب میں قومی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ شرح نمو گزشتہ 10 سال میں سب سے بلند سطح پر رہی ہے۔ زر مبادلہ کے ذخائر 23 ارب ڈالرز کی بلند ترین سطح کو چھو چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بڑھتی ہوئی آبادی پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ بڑھتی آبادی کی ضروریات پوری کرنے کے لیے مزید اسپتال بنائے جائیں۔

صدر ممنون کا کہنا تھا کہ پاکستان کی آبادی کی اکثریت نوجوانوں پر مشتمل ہے۔ ہماری دفاعی مصنوعات معیاری اور کم قیمت ہیں۔ خواتین کی صلاحیتوں میں اضافے کے لیے منصوبہ بندی کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ سڑکوں کی تعمیر سے آمد و رفت کے ذرائع میں بہتری آئی ہے۔ توانائی بحران پر ماضی میں توجہ نہیں دی گئی۔ تجویز دی تھی کہ گلگت بلتستان کو نیشنل گرڈ سے منسلک کردیا جائے۔

یاد رہے کہ آئین کے آرٹیکل 56 کے تحت نئے پارلیمانی سال کے آغاز پر صدر مملکت کا پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب روایتی آئینی ضرورت ہے۔ گزشتہ برس بھی صدر مملکت نے 4 جون کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کیا تھا۔

Check Also

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور کے سلسلے میں شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد …

Translate »