Home / Pakistan / نوازشریف کا اصل ٹھکانہ اڈیالہ میں ہے، چوروں کا گھرجیل ہی ہے، عمران خان

نوازشریف کا اصل ٹھکانہ اڈیالہ میں ہے، چوروں کا گھرجیل ہی ہے، عمران خان

اسلام آباد : چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ شریف برادران کا اصل گھر اڈیالہ جیل ہے جومجرموں کی جگہ ہے اور پیسہ چوری کرنے والے کی جگہ جیل ہی ہونی چاہئے۔

چیئرمین تحریک انصاف ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے انہوں نے کہا کہ قوم وزیراعظم نواز شریف اور ان کے اہل خانہ کے ڈراموں اور مظلومیت سے تنگ آچکی ہے اب ڈرامہ شریف مزید نہیں چلے گا، کڑے احتساب کا وقت آچکا ہے۔

شہباز شریف خادم اعلیٰ نہیں بلکہ ملزم اعلیٰ ہیں

انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو ملزم اعلیٰ کہہ کر مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آج پھر شریف خاندان نے مظلومیت کا ڈھنڈورا پیٹا اور احتساب کو سازش قرار دیا حالانکہ کرپشن کے انکشافات بین الاقوامی سطح پر پاناما پیپرز کے زریعے سامنے آئے اس میں کیا سازش ہے؟

فیکٹری نیشنل پالیسی کے تحت قومیائی گئی تھی

عمران خان نے وزیراعلیٰ شہباز شریف کی جانب سے اتفاق فاؤنڈری کو قومیائے جانے سے لے لر اب تک شریف خاندان کے احتساب کے بیان کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ نوازشریف اور شہبازشریف دونوں نے کہا 1972 سے ظلم ہوتا آرہا ہے جب کہ حقیقت یہ ہے کہ اُس وقت تمام ہی بڑی فیکٹریوں کو قومیا لیا گیا تھا لہذا اس میں شریف خاندان کی تخصیص نہیں۔

ضیاء دور میں صرف شریف خاندان کو فیکٹری واپس کی گئی

عمران خان نے کہا کہ نیشنلائزڈ ہونے والی فیکٹریوں میں سے صرف شریف خاندان کو ضیاءالحق کی خدمت کرنے پر فیکٹری واپس کی گئی تھی اور پھرایک فیکٹری سے 30 فیکٹریاں بن گئیں لیکن اب ابھی کہا یہ جا رہا ہے کہ ظلم ہورہا ہے یہ کیسا ظلم ہے جس نے خاندان کے بچوں کو بھی ارب پتی بنا دیا ہے۔

چیئرمین نیب نواز شریف کا ذاتی ملازم ہے

انہوں نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ شریف خاندان کا کبھی احتساب ہی نہیں ہوا ہے کیوں کہ یہ لوگوں کورشوت دیتے رہے ہیں اور نیب کا چیئرمین شریف خاندان کے گھرکا نوکر ہے جس نے کرپشن کے مقدمات میں انہیں گرفتار نہیں کیا بلکہ مُک مکا کیا اور شریف خاندان کی پوری مدد کی اس لیے یاد رکھیں کہ مجرم کی مدد کرنا والا بھی مجرم ہوتا ہے اس لیے نیب چیئرمین کوچھپنے کی جگہ نہیں ملے گی۔

احتساب کے ڈر سے عدالتوں پر حملہ کیا جارہا ہے

عمران خان نے کہا کہ اب اصل احتساب ہورہا ہے تو حکومتی وزراء اور مشیر اب سپریم کورٹ اور جے آئی ٹی پر حملے کررہے ہیں کیوں کہ ان کو پتہ ہے کہ جے آئی ٹی میں یہ لوگ میچ ہار چکے ہیں اور بہت جلد شریف برادران اسٹیڈیم سے باہر ہوں گے۔

نیب میں شریف برادران پر 12 مقدمات درج ہیں

انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور شہبازشریف پر12 مقدمات نیب میں موجود ہیں اس کے علاوہ اسحاق ڈار اپنےا عترافی بیان میں منی لانڈرنگ کا بیان دے چکے ہیں لہذا اب یہ پاکستانی قوم کو بے وقوف نہیں بنا سکتے ہیں، اقتدار میں بیٹھ کر تمام فلیٹس خریدے گئے تھے جس کے لیے پیسہ کہاں سے آیا اب یہ بتانا ہوگا۔

میڈیا کے گاڈ فادر کو اشتہارات دے کر نوازا جارہا ہے

عمران خان نے جے آئی ٹی کارروائی کو مخصوص زاویئے سے کوریج کرنے پر جنگ گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے میڈیا کا گاڈ فادر قراردیا اور اس حمایت کے عوض وزیراعظم پاکستان اور وزیراعلیٰ پنجاب کی جانب سے مذکورہ میڈیا ہاؤس کو مبینہ طور پر 34 ارب روپے کے اشتہارات دینے کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور سوال اُٹھایا کہ کیا میڈیا ہاؤس کا یہ کام رہ گیا ہے کہ ایک کرپٹ خاندان کو تحفظ دے؟

تحریک انصاف کا جنگ گروپ کے بائیکاٹ کا فیصلہ

ترجمان تحریک انصاف فواد چوہدری نے کہا ہے کہ جنگ گروپ نے جے آئی ٹی کی کارروائی کو منفی زاویئے سے پیش کرنے کی کوشش کی ہے اور اداروں کو تنقید کا نشانہ بنایا جس سے محسوس ہوتا ہے کہ یہ گروپ کرپشن کرنے والے صاحب اقتدار کا زیراثر ہے۔

Check Also

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور کے سلسلے میں شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد …

Translate »