Connect with:

"خبر کی دوڑ میں سب سے آگے"

Translate:
Wednesday / August 16, 2017 10:34 PM
HomePakistanSindhمصطفیٰ کمال کا وزیر اعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

مصطفیٰ کمال کا وزیر اعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے بھی وزیر اعظم سے استعفے کا مطالبہ کردیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے مستعفی ہونے میں مزید تاخیر جمہوریت کے لیے نقصان دن ثابت ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پاناما کیس کی تفتیش کے بنائی جانے والی جے آئی ٹی کی رپورٹ سامنے آنے اور اس میں وزیر اعظم اور ان کے خاندان کو قصور وار ٹہرائے جانے کے بعد وزیر اعظم نواز شریف پر مستعفی ہونے کے لیے دباؤ بڑھ گیا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کی جانب سے استعفیٰ کا مطالبہ کیے جانے کے بعد اب پاکس سرزمین پارٹی نے بھی ان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا۔

پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ کے بعد حقائق واضح ہوگئے۔ اب وزیر اعظم استعفیٰ دیں، ان کی جانب سے استعفے میں مزید تاخیر جمہوریت کے لیے نقصان دہ ثابت ہوگی۔

مصطفیٰ کمال نے ایم کیو ایم پاکستان کے میںڈیٹ کو بانی ایم کیو ایم کا مینڈیٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ 22 اگست کے واقعے کے بعد قائد ایم کیو ایم کی جماعت نہیں چل سکتی تھی، اس لیے فاروق ستار کی ایم کیو ایم پاکستان بنائی گئی۔

انہوں نے قائد ایم کیو ایم کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ہم نے پاکستان آکر سب سے پہلے ان کے خلاف باتیں کی، اس کے بعد فاروق ستار اور ان کے ساتھیوں نے بھی وہ ہی باتیں دہرائیں جو ہم پہلے کر چکے تھے۔

انہوں نے کہا کہ فاروق ستار اور ایم کیو ایم کے دیگر رہنما اپنے ہی قائد سے متعلق اپنی ہی باتوں کو جھٹلاتے رہے۔

مصطفیٰ کمال نے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کی جانب دوستی کا ہاتھ بڑھاتے ہوئے کہا کہ میں عوام اور کراچی کی ترقی کے لیے فاروق ستار اور ان کے ساتھیوں کو مل کر کام کرنے کی دعوت دیتا ہوں۔

Share