Home / Pakistan / سابق وزیراعظم نواز شریف کی اسلام آباد سے لاہور روانگی کے حوالے سے تمام تر حکمت عملی تیار

سابق وزیراعظم نواز شریف کی اسلام آباد سے لاہور روانگی کے حوالے سے تمام تر حکمت عملی تیار

سابق وزیراعظم نواز شریف کی اسلام آباد سے لاہور روانگی کے حوالے سے تمام تر حکمت عملی تیار کرلی گئی ہے۔

سابق وزیراعظم نواز شریف 9 اگست کو اسلام آباد کے پنجاب ہاؤس سے ریلی کی شکل میں لاہور میں واقع اپنی رہائش گاہ تک جائیں گے جب کہ اس حوالے سے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے انتظامات مکمل کرلئے ہیں۔
ذرائع محکمہ داخلہ پنجاب کا کہنا ہے کہ ریلی انتظامات کو حتمی شکل دینے کے لئے صوبائی محکمہ داخلہ کے حکام نے مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں سے رابطہ کیا اور سابق وزیراعظم کی لاہور آمد کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا۔
ذرائع محکمہ داخلہ کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کو بلٹ پروف گاڑی میں لاہور لایا جائے گا اور سیکیورٹی کلیئرنس کے بعد انہیں گاڑی سے باہر نکلنے کی اجازت ہوگی۔
صوبائی محکمہ داخلہ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ریلی کے راستے میں بازار بند رکھے جائیں گے اور پولیس کے مسلح اہلکار اور نشانہ باز چھتوں پر تعینات ہوں گے۔
ذرائع کے مطابق جی ٹی روڈ پر واقع تحریک انصاف کے دفاتر کو بند رکھا جائے گا اور پی ٹی آئی رہنماؤں سے ریلی کے راستے میں گڑ بڑ نہ کرنے کی یقین دہانی لی جائے گی جب کہ مسلم لیگ (ن) کی ریلی کو جلد منزل پر پہنچانے کی کوشش کی جائے گی۔
دوسری جانب ذرائع مسلم لیگ (ن) کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کے قافلے کو اسلام آباد سے 72 گھنٹے میں لاہور پہنچایا جائے گا۔
ترجمان پنجاب حکومت ملک محمد احمد نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی ریلی میں لاکھوں افراد شامل ہوں گے جب کہ ریلی کے راستے کی دکانیں بند کر کے سیکیورٹی انتظامات کیے جائیں گے۔
ترجمان پنجاب حکومت کے مطابق نواز شریف کو جیمرز کے ساتھ بلٹ پروف گاڑی مہیا کی جائےگی اور مخالفین سے بھی یقین دہانی لی جائے گی کہ وہ کوئی گڑ بڑ نہ کریں۔
ادھر سابق وزیراعظم نواز شریف سے پنجاب ہاؤس میں وزیر داخلہ احسن اقبال، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیرمملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب، طارق فضل چوہدری، پرویز رشید، انوشے رحمان، مصدق ملک سمیت دیگر وزرا اور پارٹی رہنماؤں نے ملاقات کی۔
ذرائع کے مطابق اس موقع پر وزیرداخلہ احسن اقبال نے سابق وزیراعظم کو لاہور روانگی سے متعلق سیکیورٹی پلان پر بریفنگ دی اور بتایا کہ سیکیورٹی پلان پر وفاق اور صوبائی حکومتیں رابطے میں ہیں۔
خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے پاناما کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کو وزارت عظمیٰ کے لئے نااہل قرار دیا تھا جس کے بعد سابق وزیراعظم نے عدالتی فیصلے کے بعد فوری طور پر عہدہ چھوڑ دیا تھا۔

Check Also

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور پر شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد

یوم عاشور کے سلسلے میں شہر قائد میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد …

Translate »