Home / Business / توانائی کے شعبہ میں زیر گردش قرضوں کا حجم 8 سو ارب روپے تک جا پہنچا

توانائی کے شعبہ میں زیر گردش قرضوں کا حجم 8 سو ارب روپے تک جا پہنچا

اسلام آباد: توانائی کے شعبہ میں زیر گردش قرضوں کا حجم 8 سو ارب روپے تک جا پہنچا۔ گزشتہ چھ ماہ میں گردشی قرضوں میں 115 ارب روپے کا اضافہ ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق توانائی کے شعبے میں زیر گردش قرضوں کا حجم 8 سو ارب روپے تک جا پہنچا۔
پیپکو ذرائع کے مطابق گزشتہ مالی سال میں سرکلر ڈیٹ کا حجم 6 سو 85 ارب روپے تک تھا جو کہ اب بڑھ کر 8 سو ارب روپے تک جا پہنچا ہے۔
ذرائع کے مطابق اس اضافے کی وجہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں بڑھ جانا ہے۔
وزارت پانی و بجلی کا کہنا ہے کہ 8 سو ارب میں سے 4 سو ارب کے پرانے واجبات ہیں۔ سرکلر ڈیٹ کی یہ رقم پاور ہولڈنگ کمپنی اور تقسیم کار کمپنیوں کے اکاؤنٹس میں جمع ہے۔
حیران کن بات یہ ہے کہ گزشتہ 2 برسوں سے وصولیوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ ٹیکنکل اور لائن لاسز میں خاطر خواہ کمی آئی ہے۔
سرکلر ڈیٹ کو اتارنے کے لیے حکومت کا انحصار قرضوں، بانڈز اور ٹرم فنانس سرٹیفیکٹ پر ہے۔ ان قرضوں پر سود کی ادائیگی کے بعد سرکلر ڈیٹ کا حجم مزید بڑھ جائے گا۔

 

Check Also

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروبار کے آغاز پر منفی رجحان

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروبار کے آغاز پر منفی رجحان

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں کاروبار کے آغاز پر منفی رجحان دیکھا گیا۔ کاروبار کے دوران …

Translate »