Breaking News
Home / International / بی جے پی رہنما اوراداکارپریش راول کا ارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنے کا مشورہ

بی جے پی رہنما اوراداکارپریش راول کا ارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنے کا مشورہ

نئی دہلی : مقبوضہ کشمیرکے عوام پربھارتی مظالم کے خلاف آوازاٹھانا بھارت میں جرم بن گیا، بی جے پی رہنما اور اداکارپریش راول نے عالمی شہرت یافتہ رائٹرارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنے کا مشورہ دے دیا۔

کشمیریوں کے حق میں بولنا بھارت کی عالمی شہرت یافتہ ادیبہ، فلم ساز اور کالم نگار ارون دھتی رائے کو مہنگا پڑ گیا، بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور اداکار پریش روال نے انتہا پسندی کی تمام حدیں پار کرلیں اور ارون دھتی پر برس پڑے۔

پریش راول کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں کشمیری نوجوان کو نہیں بلکہ ارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنا چاہئیے تھا۔

 

نئی دہلی : مقبوضہ کشمیرکے عوام پربھارتی مظالم کے خلاف آوازاٹھانا بھارت میں جرم بن گیا، بی جے پی رہنما اور اداکارپریش راول نے عالمی شہرت یافتہ رائٹرارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنے کا مشورہ دے دیا۔

کشمیریوں کے حق میں بولنا بھارت کی عالمی شہرت یافتہ ادیبہ، فلم ساز اور کالم نگار ارون دھتی رائے کو مہنگا پڑ گیا، بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور اداکار پریش روال نے انتہا پسندی کی تمام حدیں پار کرلیں اور ارون دھتی پر برس پڑے۔

پریش راول کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں کشمیری نوجوان کو نہیں بلکہ ارون دھتی رائے کو جیپ سے باندھنا چاہئیے تھا۔

یاد رہے کہ سری نگر کے دورے کے دوران ارون دھتی رائے نے کشمیریوں پربھارتی فوج کے مظالم کی مذمت کرتے ہوئے اسے انسانی حقوق کی خلاف ورزی قراردییتے ہوئے کہا تھا کہ مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج سات لاکھ سے بڑھاکر70 لاکھ کردی جائے لیکن بھارت اپنے مقاصد حاصل نہیں کرسکتا، طاقت سے کشمیریوں کی جدوجہد دبائی نہیں جاسکتی۔

انہوں نے بھارتی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ایسی حکومت رحم کے قابل ہے جو اپنے مصنفین کو دل کی بات کہنے سے روکتی ہے، مظالم کے خلاف آواز اٹھانے والوں کو جیلوں میں ڈالتی ہے لیکن قتل عام کرنے والے، کرپٹ، خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے اور دوسرے مجرم آزاد گھوم رہے ہوتے ہیں۔

واضح رہے کہ اپریل میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے کشمیری نوجوان کو جیپ سے باندھ کر گھنٹوں سڑکوں پر گھمایا تھا اور یہ اعلان کیا تھا کہ پتھر مارنے والوں کا انجام بھی یہی ہو گا۔

جس کے بعد دنیا بھر میں ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہونے پر بھارتی حکومت اور فوج کو سخت تنقید کا سامنا تھا اور واقعے میں ملوث فوجیوں کے خلاف مقدمہ دائر کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ سال 8 جولائی کونوجوان حریت پسند رہنمابرہان وانی کو بھارتی فورسز نے دوساتھیوں سمیت ماوارائےعدالت قتل کیا تھا، جس کے بعد سے اب تک 100 افراد شہید اور 15 ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔

Check Also

سمندری طوفان ماریا کا رخ ڈومینیکو کے ساحلی علاقوں سے ٹکرانے کے بعد اب پورٹوریکو کی طرف

سمندری طوفان ماریا کا رخ ڈومینیکو کے ساحلی علاقوں سے ٹکرانے کے بعد اب پورٹوریکو کی طرف

پورٹوریکو : سمندری طوفان ماریا ڈومینیکوکے ساحلی علاقوں سے ٹکرانے کے بعد اب پورٹوریکو کا …

Translate »